حکومت کے شاہانہ اخراجات ملکی تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئے

عوام کو کفایت شعاری کا درس دینے والے عمران خان کی حکومت کے شاہانہ اخراجات ملکی تاریخ میں سب سے زیادہ ہوچکے ، وزیراعظم عمران خان نے سخت شرائط پر قرضے لے کر اپنی آمدنی سے 10 کھرب روپے زیادہ خرچ کر دئیے، چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو
کراچی (اُردو پوائنٹ، اخبار تازہ ترین، 20 مئی 2021) عوام کو کفایت شعاری کا درس دینے والے عمران خان کی حکومت کے شاہانہ اخراجات ملکی تاریخ میں سب سے زیادہ ہوچکے ہیں۔ چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو نے وزیراعظم عمران خان پر سخت شرائط پر قرضے لے کر اپنی آمدنی سے 10 کھرب روپے زیادہ خرچ کرنے کا الزام عائد کر دیا ۔ تفصیلات کے مطابق میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ قرضوں کے خلاف جھوٹی مہم چلا کر پی ٹی آئی حکومت اب تک 33 ارب ڈالر سے زائد کا غیرملکی قرضہ لے چکی ہے بلاول بھٹو کا کہنا تھاکہ قرضوں کے سود کی وجہ سے تنخواہوں کی ادائیگی کے بعد ترقیاتی بجٹ تو درکنار دفاعی بجٹ کے لیے بھی حکومت کے پاس پیسے نہیں ہوں گے. بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ عوام کو کفایت شعاری کا درس دینے والے عمران خان کی حکومت کے شاہانہ اخراجات 28 سالہ ملکی تاریخ میں سب سے زیادہ ہوچکے ہیں انہوں نے کہا کہ عوام کو معاشی ٹیم کا لالی پاپ دینے والے عمران خان کی حکومت سخت شرائط پر قرضے لے کر اپنی آمدنی سے 10 کھرب روپے زیادہ خرچ کر چکی ہے بلاول بھٹو زرداری کا کہنا تھا کہ نرخوں میں سینکڑوں فیصد اضافے کے بعد بھی صرف بجلی کے شعبے میں اڑھائی کھرب روپے اور گیس کے شعبے میں گردشی قرضہ 350 ارب روپوں سے زیادہ ہوچکا ہے۔
انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم عمران خان کا ملک کو خیراتی ادارے کی طرز پر چلانے کا تجربہ ناکام ہو چکا ہے قیام پاکستان سے اتنی تباہی نہیں ہوئی جو عمران خان نے اکیلے پھیلائی ہے بلاول بھٹو نے کہا کہ عمران خان اور ان کے حواری پرویز مشرف کی طرح لوٹ مار کے بعد لندن بھاگ جائیں گے. قبل ازیں اپنے بیان میں بلاول بھٹو زرداری نے کہاتھا کہ عمران خان نے 25 سال اس لیے جدوجہد کی کہ ہرپاکستانی کو پونے 2 لاکھ روپے کے حکومتی قرضے کے بوجھ تلے دبا سکیں پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین نے پاکستان تحریک انصاف حکومت کی معاشی پالیسیوں پر تنقید کرتے ہوئے کہا تھاکہ عمران خان نے 25 سال اس لیے جدوجہد کی کہ ہر پاکستانی کو پونے 2 لاکھ روپے کے حکومتی قرضے کے بوجھ تلے دباسکیں۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.