اٹلی کے پورٹ ورکرز نے اسرائیل کیلئے اسلحہ لے جانے والی شپمنٹ لوڈ کرنے سے انکار کردیا

روم (ڈیلی پاکستان آن لائن) یورپی ملک اٹلی کے پورٹ ورکرز نے اسرائیل کیلئے اسلحہ لے کر جانے والی شپمنٹ لوڈ کرنے سے انکار کردیا۔

دی لندن اکنامکس کے مطابق اطالوی شہر لیوورنو کی بندرگاہ پر کام کرنے والے کارکنوں نے فلسطینیوں سے اظہار یکجہتی کیلئے وہ شپمنٹ لوڈ کرنے سے انکار کردیا جو اسرائیل کیلئے اسلحے پر مبنی تھی۔ پورٹ انتظامیہ کی جانب سے اعلان کیا گیا ہے کہ ان کی بندرگاہ فلسطینیوں کے قتلِ عام میں حصہ دار نہیں بنے گی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ بندرگاہ کے ورکرز کو اسلحے کی کھیپ کی اطلاع “دی ویپن واچ” نامی ایک ایسی این جی او نے دی تھی جو بحیرہ روم کے ذریعے ہونے والی اسلحے کی تجارت پر نظر رکھتی ہے۔ این جی او نے اطالوی حکومت سے بھی مطالبہ کیا ہے کہ وہ اسرائیل کو اسلحے کی سپلائی بند کرے۔

اسلحے کی یہ کھیپ اٹلی کے شہر ٹسکان سے اسرائیل کی اشدود بندرگاہ کیلئے جانی تھی۔ ورکرز کے انکار کے بعد اسلحے کی اس کھیپ کو لیوورنو بندرگاہ سے ہٹا کر نیپلز کی طرف روانہ کردیا گیا ہے، امید ظاہر کی جا رہی ہے کہ حکام کو وہاں بھی پورٹ ورکرز کی طرف سے ایسی ہی مزاحمت کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.