بغداد کے ہسپتال میں آتشزدگی، اتنی زیادہ ہلاکتیں کہ آپ کی آنکھیں بھی نم ہوجائیں گی

بغداد (ویب ڈیسک) عراقی دارلحکومت کے ابن الخطیب ہسپتال میں آکسیجن سلینڈر پھٹنے سے کورونا وارڈ میں آتشزدگی کے نتیجے میں 82 مریض جاں بحق ہوگئے، حادثے کے بعد تین روز کے لیے ملک میں سوگ کا اعلان کردیا گیا۔

الجزیرہ کے مطابق حادثے کے بعد فوری طور پر آگ بجھانے کے لیے امدادی کارروائیاں شروع کی گئیں اور ہسپتال میں موجود مریضوں اور ان کے تیمارداروں سمیت دیگر عملے کو باہر نکالا گیا، 100 سے زائد افراد زخمی ہیں۔اپنے بھائی کی عیادت کے لیے ہسپتال میں موجود احمد ذکی نے بتایا کہ جب آگ بھڑکی تو لوگ کھڑکیوں سے کود رہے تھے، یہ آگ پورے کورونا یونٹ میں لگی ہوئی تھی ۔

عراقی شہری دفاع کے ترجمان کا کہنا ہے کہ ہسپتال میں آگ بجھانے کا کوئی انتظام نہیں جس کی وجہ سے آگ نے تیزی سے پورے ہسپتال کو اپنی لپیٹ میں لیا جب کہ مریضوں کو آگ کی وجہ سے وینٹیلیٹرز سے ہٹانا پڑا جس کے باعث زیادہ جانی نقصان کا سامنا ہوا۔وزیراعظم نے تحقیقات کا حکم دیتے ہوئے رپورٹ طلب کرلی ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.