آنا چاہتے ہو آؤ ، نہیں آنا تو نہ آؤ، ہمیں کوئی فکر نہیں: پاک بھارت کرکٹ سیریز کے حوالے سے جاوید میانداد کھل کر بول پڑے

کراچی (ویب ڈیسک) پاکستان اور بھارت کے درمیان باہمی کرکٹ روابط کی بحالی کے حوالے سے باتیں ہورہی ہیں تاہم سابق کپتان جاوید میانداد اس حوالے سے کسی بھی قسم کی خوش فہمی کا شکار ہونے کو تیار نہیں ہیں، ایک نجی ٹی وی کو انٹرویو میں ان کا کہنا تھا کہ بھارت کے اوپر اعتبار نہ کریں، جب کچھ شیڈول ہوجائے گا تب بات کروں گا، یہ لوگ اپنے مطلب کیلیے ہوائی فائر کرتے ہیں، ہمیں دو ٹوک الفاظ میں کہنا چاہیے کہ آنا چاہتے ہو آؤ نہیں آنا نہیں آنا تو نہ آؤ، ہمیں کوئی فکر نہیں ہے۔

ایکسپریس کے مطابق ان کا کہناتھاکہ الیکشن کی وجہ سے ایسی باتیں کی جاتی ہیں، ان کے نہ کھیلنے سے ہمیں کوئی نقصان نہیں ہوا، ہماری کونسی کرکٹ ختم ہوگئی، ہماری کوچنگ اچھی نہیں ہورہی، ان لوگوں کو لے کر آئیں جن کی اپنی کرکٹ اچھی رہی ہو، جو اپنی فیلڈ میں ماہر ہو وہی آگے اچھا کھیلنا سیکھا سکتا ہے، جو کچھ میں نے سیکھا میں وہی آگے سیکھانے کی کوشش کروں گا، خود سے پریشر ہٹانے کیلیے باہر سے لوگوں کو لایا گیا ہے، مقامی لوگوں کو بورڈ سے دو منٹ میں اٹھاکر باہر پھینک دیا جاتا ہے، معلوم نہیں پاکستان کرکٹ بورڈ کو کون چلا رہا ہے، جنھوں نے پاکستان کی خدمت کی وہ سابق پلیئر بھیک مانگ رہے ہیں۔

ایک سوال پر جاوید میانداد نے کہا کہ ہمیں فکسنگ نے تباہ کیا، جب آپ آؤٹ ہونے کے پیسے لیتے ہیں تو کیسے اوپر جائیں گے، لڑکوں کے فکسنگ میں پڑنے کی وجہ سے میں نے کرکٹ چھوڑی، فکسنگ میں پرفارم نہ کرنے کا پیسہ لیتے ہیں،کوچنگ بھی اسی لیے چھوڑی، ساری ٹیم کے بارے میں بورڈ کو بتایا مگر وہ مانتے ہی نہیں تھے، کھیلنے کے انداز سے ہی معلوم ہوجاتا ہے کہ آگے والا کیا کھیل کھیل رہا ہے، کئی بار تو رات کو ہی معلوم ہوجاتا تھا کہ اگلے روز میچ میں کیا ہونے والا ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.