کورونا وائرس کے پھیلاﺅ کے باعث تعلیمی ادارے مزید کب تک بند رہیں گے ؟ حکومت نے اعلان کر دیا

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن )وزیر تعلیم شفقت محمود نے اعلان کرتے ہوئے کہا کہ لاہوراور اسلام آباد میں کورونا وائرس کا پھیلاﺅ تشویشناک ہے اس لیے بعض اضلاع میں تعلیمی ادارے 11 اپریل تک بند رکھنے کا فیصلہ کیا گیاہے ۔

این سی او سی کے اجلاس کے بعد پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے شفقت محمود کا کہناتھا کہ تعلیمی اداروں کا مطلب ہے کہ ہر قسم کے تعلیمی ادارے جن میں یونیورسٹی ،مدارس ،سکول اور سارے کے سارے 15 سے 28 مارچ تک بند کیئے گئے تھے ، جن علاقوں میں بیماری کی شدت زیادہ تھی ، انہی علاقوں میں یہ فیصلہ کیا گیاہے کہ اب 11 اپریل تک ان منتخب اضلاع میں مزید تعلیمی ادارے بند کیے جائیں گے ۔ان کا کہناتھا کہ پنجاب کے 10 اضلاع میں تعلیمی ادارے بند رہیں گے ان میں فیصل آباد، سیالکوٹ ، ملتان ،گجرانوالہ، گجرات ،راولپنڈی، سرگودھا، شیخو پورہ، لاہور شامل ہیں۔

شفقت محمودکا کہناتھا کہ یہ صوبوں کی صوابدید ہے کہ کونسے شہروں میں تعلیمی ادارے بند کرنے ہیں ، پنجاب کے 9 اضلاع میں تعلیمی ادارے بند کیے گئے تھے اور بعدازاں اس میں مزید ایک اور ضلع کا اضافہ کیا گیا تھا جبکہ اسی طرح خیبر پختون خواہ میں بھی 8 اضلاف میں تعلیمی ادارے بند کیے گئے تھے ۔ بیماری کی شدت کو دیکھتے ہوئے صوبے اپنے محکمہ صحت کے ساتھ مل کر فیصلہ کریں گے کہ کن شہروں میں تعلیمی اداروں کو بند کرناہے ۔

شفقت محمود کا کہناتھا کہ 11 اپریل تک تعلیمی اداروں کی بندش کے دوران اگر انتظامیہ چاہے تو اساتذہ کو سکول بلا سکتی ہے ، ہم بیماری کی صورتحال پر نظر رکھے ہوئے ہیں ، ہمیں ادراک ہے کہ سکول بند کرنے سے بچوں کی تعلیم کا بہت نقصان ہوتاہے لیکن بچوں کی صحت اولین ترجیح ہے ، جس پر ہم رسک نہیں لے سکتے ہیں ۔

انہوں نے کہا کہ این سی او سی کے اجلاس میں آنے والے امتحانات کے بارے میں بھی گفتگو ہوئی ہے ، نویں ، دسویں ، گیارویں اور بار ہویں جماعت کے بورڈ کے امتحانات اپنے ٹائم ٹیبل کے مطابق ہوں گے ، جو کہ مئی ، جون اور جولائی میں ہوں گے ، گزشتہ سال بغیر امتحانات کے بچوں کو پروموٹ کر دیا گیا تھا لیکن اس مرتبہ امتحانات لازمی ہوں گے ۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.