’پیپلز پارٹی آتی ہے تو ٹھیک ورنہ ۔۔۔‘ مولانا فضل الرحمان اور نواز شریف نے کس بات پر اتفاق کرلیا؟

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان ڈیمو کریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان اور سابق وزیر اعظم نواز شریف نے لانگ مارچ نہ روکنے پر اتفاق کرلیا اور واضح کیا ہے کہ پیپلز پارٹی شامل ہوگی تو ٹھیک ہے ورنہ پی ڈی ایم کی باقی نو جماعتیں لائحہ عمل طے کریں گی۔

نجی ٹی وی اے آر وائی نیوز کے مطابق پی ڈی ایم کے سربراہ مولانا فضل الرحمان اور سابق وزیر اعظم نواز شریف میں ٹیلی فونک رابطہ ہوا ہے جس میں موجودہ سیاسی صورتحال اور لانگ مارچ کے حوالے سے گفتگو کی گئی۔ دونوں رہنماؤں نے اس بات پر اتفاق کیا کہ پیپلز پارٹی آتی ہے تو ٹھیک ورنہ پی ڈی ایم کی نو جماعتیں لائحہ عمل طے کریں گی۔ دونوں رہنماؤں کی جیل بھر وتحریک پر بھی بات چیت ہوئی۔

اس موقع پر مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ انہوں نے اپنے کارکنوں کو تیاری کیلئے کہہ دیا ہے، لانگ مارچ کسی صورت نہیں روکیں گے۔ سب کو ساتھ لے کر چلنا چاہتے ہیں لیکن اصل بات عوام کی حمایت حاصل کرنا ہے۔

خیال رہے کہ دو روز قبل ہونے والے پی ڈی ایم کے سربراہی اجلاس میں پیپلز پارٹی نے لانگ مارچ کیلئے اسمبلیوں سے استعفوں کی مخالفت کی تھی جس کے بعد مولانا فضل الرحمان نے26 مارچ کو ہونے والا لانگ مارچ ملتوی کردیا تھا۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.