کارکردگی بہتر نہ کی تو کسی کو نہیں چھوڑوں گا

’کارکردگی بہتر نہ کی تو کسی کو نہیں چھوڑوں گا‘ وزیر اعظم کی حکومتی عہدیداروں کو فیصلہ کن وارننگ
تمام وزراء کی رپورٹس دیکھ کر کارکرد گی نہ دکھانے والوں کو ہٹا دیں ، اگر یہ نظام رکاوٹ ہے تو ہم اس نظام کو بھی بدلیں گے ، وزیر اعظم عمران خان نے 9رکنی کمیٹی کو خصوصی ہدایات جاری کردیں

اسلام آباد (20 مارچ2021ء) وزیر اعظم عمران خان نے فیصلہ کرلیا ہے کہ اگر کارکردگی بہتر نہ کی تو وہ حکومتی لوگوں کو نہیں چھوڑیں گے ، ان خیالات کا اظہار سینئر صحافی و تجزیہ کار عمران یعقوب خان نے کیا۔ تفصیلات کے مطابق نجی ٹی وی چینل کے ایک پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم نے فیصلہ کیا ہے کہ اگر کارکردگی بہتر نہ کی تو وہ حکومتی لوگوں میں سے کسی کو نہیں چھوڑیں گے ، اس مقصد کیلئے عمران خان نے ایک 9 رکنی کمیٹی بنا دی ہے جو روزانہ کی بنیاد پر اجلاس کرکے وزیر اعظم کو اس حوالے سے آگاہ کرتی ہے۔سینئر تجزیہ کار کے مطابق وزیر اعظم عمران خان نے مذکورہ کمیٹی کی یہ ڈیوٹی لگائی ہے کہ تمام وزراء کی رپورٹس دیکھ کر جنہوں نے کارکرد گی نہیں دکھائی ان کو ہٹا دیں جب کہ وزیر اعظم نے بیوروکریسی کو بھی دیکھنے کیلئے کمیٹی کو کہا ہے کہ اگر یہ نظام رکاوٹ ہے ہم اس نظام کو بھی بدلیں گے۔اس کے علاوہ وزیراعظم عمران خان نے نیب قوانین میں ترمیم اور انتخابی اصلاحات کیلئے بھی ایک 10 رکنی سیاسی کمیٹی قائم کردی ، کمیٹی انتخابی اصلاحات اور نیب قوانین میں ترامیم پر اپوزیشن سے مذاکرات کرے گی، سیاسی کمیٹی معیشت، روزگار، ریلیف پیکجز اور سبسڈیز سے متعلق بھی تجاویز پیش کرےگی، سیاسی کمیٹی روزانہ کی بنیاد پر وزیراعظم کو معاملات سے آگاہ رکھے گی۔تفصیلات کے مطابق وفاقی حکومت نے نیب قوانین میں ترمیم پرغور شروع کردیا ہے۔ اسی طرح احساس پروگرام کے ذریعے غریب طبقے کو مختلف شعبوں میں براہ راست سبسڈی دینے پر بھی غور کیا جارہا ہے ، ان معاملات کو عملی جامہ پہنانے کیلئے وزیراعظم عمران خان نے 10رکنی سیاسی کمیٹی قائم کردی ، کمیٹی انتخابی اصلاحات اور نیب قوانین میں ترامیم پر اپوزیشن سے مذاکرات کرےگی۔ بتایا گیا ہے کہ سیاسی کمیٹی معیشت، روزگار، ریلیف پیکجز اور غریبوں کو سبسڈیز سے متعلق بھی تجاویز پیش کرےگی ، سیاسی کمیٹی روزانہ کی بنیاد پر وزیراعظم سے ملاقات کرے گی جس میں روزانہ کی پیشرفت سے آگاہ کیا جائے گا ، سیاسی کمیٹی میں شفقت محمود، عامر کیانی، سیف اللہ نیازی، شبلی فراز، پرویزخٹک، شاہ محمود قریشی، فواد چودھری، شیخ رشید بھی شامل ہیں ، پرویز خٹک اور شاہ محمود قریشی کو اپوزیشن سے رابطوں اور مذاکرات کا ٹاسک سونپا گیا ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.