این اے 75 ضمنی انتخاب،ڈسکہ کے ووٹرز نے دھاندلی کا ذمے دار پی ٹی آئی کو قرار دے دیا

سیالکوٹ (ویب ڈیسک)این اے 75 ضمنی انتخاب کے نتائج کو الیکشن کمیشن نے رد کر دیاہے اور دوبارہ الیکشن کروانے کا حکم جاری کر دیاہے تاہم اس حوالے سے پی ٹی آئی نے سپریم کورٹ سے رجوع کر رکھاہے جہاں کیس کی سماعت جاری ہے لیکن دوسری جانب ایپسوس نے اپنا سروے جاری کر دیاہے جس میں ڈسکہ کے ووٹرز نے دھاندلی کا سب سے زیادہ ذمے دار پاکستان تحریک انصاف کو قرار دیا جب کہ دوسرے نمبر پر پاکستان مسلم لیگ (ن) ذمے دار قرار پائی۔

نجی ٹی وی جیو نیوز کے مطابق ایپسوس کے سروے میں 47 فیصد نے پی ٹی آئی اور 12 فیصد نے پاکستان مسلم لیگ (ن) جب کہ پلس کنسلٹنٹ کے سروے میں 36 فیصد نے تحریک انصاف اور 24 فیصد نے (ن) لیگ پر انگلی اٹھائی۔ گیلپ پاکستان کے سروے میں 32 فیصد افراد نے پی ٹی آئی اور 12 فیصد نے (ن) لیگ کو دھاندلی کا ذمہ دار کہا۔ایپسوس سروے میں 67 اورگیلپ پاکستان کے سروے میں 60 فیصد افراد نے ڈسکہ میں دوبارہ ضمنی الیکشن کرانے کے الیکشن کمیشن کے فیصلے کی حمایت کی جب کہ پلس کنسلٹنٹ کے سروے میں 40 فیصد نے دوبارہ انتخاب کی مخالفت کی۔سروے میں این اے 75 سے 3 ہزار سے زائد ووٹرز کی رائے شامل کی گئی۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.